Sultanul hind-hazrat-khaja-moinuddin-chishtee

504 views

Published on

Khawariji=wahabi=deobandi=ahle hadees=najdi=ghair muqaled=salafi=maududi=qadyani=tableeghi ,etc
Rawafiz=shia=asna ashari=zaidi=imamia=ismaeeli=jafari= ,etc

Published in: Spiritual, Technology
0 Comments
0 Likes
Statistics
Notes
  • Be the first to comment

  • Be the first to like this

No Downloads
Views
Total views
504
On SlideShare
0
From Embeds
0
Number of Embeds
1
Actions
Shares
0
Downloads
2
Comments
0
Likes
0
Embeds 0
No embeds

No notes for slide

Sultanul hind-hazrat-khaja-moinuddin-chishtee

  1. 1. ‫§‬ ‫1‬‫عطائے رسول فی الہند۔خواجہ غریب نواز۔‬ ‫بانئ سلسلۂ چشتیہ۔‬ ‫سلطا ن ُ الہندحضرت خواجہ معین الدین‬ ‫چشتی رحمۃ اللہ علیہ‬ ‫گلدستہ تحریر‬ ‫مولنامحمد ناصر خان چشتی‬‫علم ومعرفککت کککے تاج دار،افتاب شریعککت وطریقککت،اقلیککم ِولیککت کککے‬ ‫ٓ‬‫نیراعظکم، قطکب المشائخ، نائب رسکول فکی الہنکد،خواجکہ غریکب نواز،‬‫سکلسلہ چشتیکہ ککے مؤسکس وبانکی،سکلطان الہندحضرت خواجکہ معیکن‬‫الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ 41 رجب المرجب 635ھ/1411ء‬‫کوپیرکککے دن قصککبہ ‘‘سککجستان’’ میککں متولد ہوئے۔اپ کککے والدمحترم‬ ‫ٓ‬‫حضرت سکیدناخواجہ غیاث الدیکن رحمکۃ اللہ علیکہ علم ظاہری وباطنکی‬‫میں یکتائے روزگار،اپنے عہدکے بہت برگزیدہ اورکامل ولی اللہ تھے۔جب‬‫ککہ اپ ککی والدۂ محترمکہ حضرت بکی بکی ماہِ نوررحمکۃ اللہ علیہابھکی‬ ‫ٓ‬ ‫اپنے وقت کی بڑی عابدہ وزاہدہ خاتون اورولیۂ کاملہ تھیں۔‬ ‫سلسلہ نسب‬‫سکلطان الہندحضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ اللہ‬‫علیکککککہ والدککککککی طرف سکککککے ‘‘حسکککککینی’’اور والدہ ککککککی طرف‬‫سکے‘‘حسکنی’’سکیدیعنی اپ ‘‘ نجیکب الطرفیکن سکید’’ ہیکں۔اپ کاسکلسلہ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫نسب تیرھویں پشت میں خلیفہ چہارم اور دامادِ رسول صلی اللہ علیہ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  2. 2. ‫§‬ ‫1‬‫وسکککلم امیرالمؤمنیکککن حضرت علی المرتضیکککٰ کرم اللہ وجہہ سکککے‬‫:‬ ‫جاملتاہے۔اپ ککا سکلسلہ نسکب حسکب ذیکل ہے‬ ‫ٓ‬‫حضرت خواجکہ سکید معیکن الدیکن بکن سکید غیاث الدیکن بکن سکید کمال‬‫الدیکن بکن سکید احمکد حسکین بکن سکید طاہر بکن سکید عبکد العزیزبکن سکید‬‫ابراہیکم بکن امام علی رضکا بکن امام مکو سکیٰ ککا ظکم بکن امام جعفکر بکن‬‫امام محمکد باقکر بکن علی بکن امام زیکن العابدیکن بکن امام حسکین بکن‬ ‫حضرت سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہم ۔‬ ‫علوم ظاہری وباطنی کا حصول اورشر ف ِ بیعت‬‫سکلطان الہندحضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ اللہ‬‫علیکہ نکے مقتدائے زمانکہ ہسکتیوں سکے علومک دینیکہ یعنکی علم قران،علم‬ ‫ٓ‬ ‫ِ‬‫حدیکث،علم تفسکیر،علم فقکہ ، علم منطکق اورعلم فلسکفہ وغیرہ ککی‬‫تعلیکم حاصکل ککی۔اپ نکے علم ظاہری ککے حصکول میکں تقریباچونتیکس )‬ ‫ٓ‬‫43( برس صرف کیے، جب کہ علوم دینیہ کے حصول سے فارغ ہونے کے‬‫بعدعلم معرفکت وسکلوک ککی تمنااپ کوایکک جگکہ سکے دوسکری جگکہ‬ ‫ٓ‬ ‫کُشاں کشاں لے جاتی رہی۔‬‫چنانچکہ عراقکِ عجکم)ایران( میکں پہنکچ کرعلمکِ معرفکت وسکلوک ککی‬‫تحصککککیل کککککے لیککککے اپ نککککے مرشدکامککککل کککککی تلش کککککی اور‬ ‫ٓ‬‫گوہرمقصودبالخراپ کونیشاپورکے قصبہ ‘‘ہاروَن’’ میں مل گیا۔جہاں اپ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫حضرت خواجککہ شیککخ عثمان ہاروَککنی رحمککۃ اللہ علیککہ ایسککے عظیککم‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  3. 3. ‫§‬ ‫1‬‫المرتبت اورجلیل القدربزرگ کی خدمت میں حاضرہوئے اوراپ کے دست‬ ‫ٓ‬‫مبارک پرشرف ِبیعکت سکے فیکض یاب ہوئے۔حضرت شیکخ عثمان ہارونکی‬‫علیہ الرحمۃ نے نہ صرف اپ کودولت بیعت سے نوازا بلکہ اپ کوخرقۂ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫خلفککت بھککی عنایککت فرمایککا اوراپ کواپنککا خاص مصککلّی)جائے نماز)،‬ ‫ٓ‬ ‫عصااورپاپوش مبارک بھی عنایت فرمایا۔‬‫بارگا ہ ِ مصکطفوی صکلی اللہ علیکہ وسکلم میکں‬ ‫حاضری‬‫حضرت خواجکہ غریکب نواز رحمکۃ اللہ علیکہ اپنکے پیرو مرشکد ککے ہمراہ‬‫بیکس سکال تکک رہے اور بغداد شریکف سکے اپنکے شیکخ طریقکت ککے ہمراہ‬‫زیارتک حرمیکن شریفیکن ککا مبارک سکفر اختیار فکر مکا یکا ۔ چنانچکہ اس‬ ‫ِ‬‫مقدس سکفر میکں اسکلمی علوم و فنون ککے عظیکم مراککز مثل ً بُخارا،‬‫سکمر قند، بلخ، بد خشاں وغیرہ ککی سکیرو سکیاحت ککی۔ بعد ازاں مکہ‬‫مکرمکہ پہنکچ ککر مناسککِ حکج ادا ککر ککے حضرت خواجکہ شیکخ عثمان ہا‬‫رو َنی رحمۃ اللہ علیہ نے حضر ت خواجہ غریب نواز رحمۃ اللہ علیہ کا‬‫ہاتکھ پککڑ ا اور میزابک رحمکت ککے نیچکے کھڑے ہو ککر بکا رگاہِ خدا وندی‬ ‫ِ‬ ‫میں اپنے ہاتھ پھیل کر یوں دُعا فر ما ئی:‬‫‘‘اے میرے پروردگار! میرے معین الدین حسن کو اپنی با ر گاہ میں قبول‬ ‫فر ما‘‘!‬ ‫اسی وقت غیب سے اوازائی:‬ ‫ٓ ٓ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  4. 4. ‫§‬ ‫1‬‫‘‘معیکن الدیکن !ہمارا دوسکت ہے ، ہم نکے اسکے قبول فکر مکا یکا اور عزت و‬ ‫عظمت عطا کی ’’۔‬‫یہاں سے فراغت کے بعد حضرت خواجہ عثمان ہا رونی ، خواجہ غریب‬‫نواز رحمۃ اللہ علیہ کو لے کر مدینہ منورہ میں بار گاہِ مصطفوی صلی‬‫اللہ علیہ وسلم پہنچے اوراپ صلی اللہ علیہ وسلم کی بار گاہِ مقدسہ‬ ‫ٓ‬‫میں ہدیہ درودو سکلم پیش کیا الصصلوٰ ۃ والسصلم علیصک یصا سصید المرسصلین و‬‫خاتصم النبیصن۔روضکۂ اقدس سکے یوں جواب عنایکت ہوا وعلیکصم السصلم یصا قطصب‬‫المشائخ حضرت خواجہ معین الدین جشتی علیہ الرحمۃ با ر گاہ ِ رسالت ماب‬ ‫ٓ‬‫صلی اللہ علیہ وسلم سے سلم کا جواب اورقطب المشائخ کا خطاب‬ ‫سن کر بہت ہی خوش ہوئے ۔‬ ‫لہورامداورمزا ر ِداتاگنج پرحاضری‬ ‫ٓ‬‫چنا نچہ حضرت خواجہ معین الدین چشتی علیہ الرحمۃ سیروسیاحت‬‫کرتکے کرتکے مختلف شہروں سکے ہو تکے ہوئے اور اولیاءِ کرام ککی زیکا رت و‬‫صکحبت ککا فیکض حاصکل ککر تکے ہوئے جکب ل ہور تشریکف ل ئے تکو یہاں‬‫حضور دا تا گنج بخش سید علی ہجویری علیہ الرحمۃ کے مزار شریف‬‫پکر حاضری دی اور چالیکس دن تکک معتککف بھکی رہے اور یہاں بکے بہا‬‫انوارو تجلیات سے فیضیاب ہو ئے تو رخصت ہو تے وقت یہ شعر بہ طورِ‬ ‫نذرانۂ عقیدت حضور داتا صاحب کی شان میں پیش کیا ۔‬ ‫گنج بخش ، فیض عالم ، مظہر نورِ خدا‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  5. 5. ‫§‬ ‫1‬ ‫ناقصاں را پیر کامل ، کا ملں را راہنما‬‫حضرت خواجہ معین الدین چشتی علیہ الرحمۃ کو جو فیوض برکا ت‬‫اور انوار و تجلیات یہاں سکے حاصکل ہوئیکں ، اس ککا اظہار و اعلن اس‬‫شعر کی صورت میں کر دیا۔ اس شعر کو اتنی شہرت ہو ئی کہ اس‬‫کے بعد حضور داتا گنج بخش سید علی ہجویری علیہ الرحمۃ کو لوگوں‬ ‫نے ‘‘داتا گنج بخش’’کے نام سے مو سوم اور مشہور کر دیا۔‬ ‫سیرت و کردار‬‫حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ کی انقلب‬‫افرین شخصیت ہندوستان کی تاریخ میں ایک نہایت ہی زریں با ب کی‬ ‫ٓ‬‫حیثیت رکھتی ہے ۔ اپ کے اس دور میں جہاں ایک طرف اپ کی توجہ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫اور تبلیغی مسا عی سے ظلمت کدہ ہند میں شمع ِ اسلم کی روشنی‬‫پھیکل رہی تھکی ، دلوں ککی تاریکیاں ایمان و یقیکن ککی روشنکی میکں‬‫تبدیکل ہو رہی تھیکں ، لوگ جکو ق در جوق حلقکہ اسکلم میکں داخکل ہو‬‫رہے تھکے۔ تودوسکری طرف ہندوسکتان میکں مسکلمانوں ککا سکیاسی غلبکہ‬ ‫بھی بڑھ رہاتھا۔‬‫حضرت خواجککہ غریککب نواز رحمککۃ اللہ علیککہ کککے عقیدت مندوں اور‬‫مریدوں میکں شامکل سکلطان شہاب الدیکن غوری اوراُن ککے بعدسکلطان‬‫قطکب الدیکن ایبکک اور سکلطان شمکس الدیکن التمکش ایسکے بکا لغ نظکر ،‬ ‫بلند ہمت اور عادل حکمران سیاسی اقتدار کو مستحکم کر رہے تھے ۔‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  6. 6. ‫§‬ ‫1‬‫حضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ اللہ علیکہ نکے تبلیکغ‬‫اسلم ، احیائے دین و ملت ، نفاذِ شریعت اور تزکیۂ قلوب واذہان کا اہم‬‫ترین فریضہ جس موثر اور دل نشین انداز میں انجام دیا ، وہ اسلمی‬‫تاریخ میں سنہری حروف میں لکھنے کے قابل ہے۔ اپ کی تشریف اوری‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫کے بعد تو اس ملک کی کا یا ہی پلٹ گئی ۔ ل کھوں غیر مسلم اپ کے‬ ‫ٓ‬ ‫دست مبارک پر اسلم لئے۔‬‫حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ کی حیا تِ‬‫مبارککہ قران و سکنت ککا قابکل رشکک نمونکہ تھکی ۔اپ ککی تمام زندگکی‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫تبلیکغ اسکلم ، عبادت و ریاضکت اور سکادگی و قناعکت سکے عبارت تھکی۔‬‫اپ ہمیشکہ دن ککو روزہ رکھتکے اور رات ککو قیام میکں گزارتکے تھکے ۔ اپ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫مکارم ِک اخلق اور محاسکن اخلق ککے عظیکم پیکر اوراخلق ِک نبوی صکلی‬ ‫اللہ علیہ وسلم کے مکمل نمونہ تھے ۔‬‫حضرت خواجکہ غریکب نواز رحمکۃ اللہ علیکہ غرباء اور مسکاکین ککے لیکے‬‫سرا پا ر حمت و شفقت کا مجسمہ تھے اور غریبوں سے بے مثال محبت‬‫و شفقت کی وجہ سے دنیا اپ کو ‘‘غریب نواز’’کے عظیم لقب سے یا د‬ ‫ٓ‬‫کر تی ہے ۔دنیا سے بے رغبتی اورزہد و قناعت کا یہ عالم تھا کہ اپ کی‬ ‫ٓ‬‫خدمکت عالیکہ میکں جکو نذرانکے پیکش کیکے جکا تکے وہ اپ اسکی وقکت فقراء‬ ‫ٓ‬‫اور غرباء میکں تقسکیم فکر مکا دیتکے تھکے۔ سکخاوت و غریکب نوازی ککا یکہ‬‫حال تھا کہ کبھی کوئی سائل اپ کے در سے خالی ہا تھ نہ جا تا تھا۔‬ ‫ٓ‬ ‫اپ بڑے حلیم و بر د بار ، منکسر المزاج اور بڑے متوا ضع تھے۔‬ ‫ٓ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  7. 7. ‫§‬ ‫1‬‫اپ ککے پیکش نظکر زندگکی ککا اصکل مقصکد تبلیکغ اسکلم اور خدمکت خلق‬ ‫ٓ‬‫تھا۔اپ کے بعض ملفوظا تِ عالیہ سے یہ پتہ چلتا ہے کہ اپ بڑے صاحب‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫دل،وس کیع المشرب اور نہای کت دردمن کد انس کان تھ کے۔ اپ عمی کق جذب کہ‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک ٓ‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫انسانیت کے علمبردار تھے۔ اپ اپنے مریدین ، معتقدین اور متوسلین کو‬ ‫ٓ‬‫یکہ تعلیکم دیتکے تھکے ککہ وہ اپنکے اندر دریکا ککی ماننکد سکخاوت و فیاضکی،‬‫سکورج ایسکی گرم جوشکی و شفقکت اور زمیکن ایسکی مہمان نوازی اور‬ ‫تواضع پیدا کیاکریں۔‬‫اسی طرح اپ فرماتے ہیں کہ : ‘‘جب اللہ تعال یٰ اپنے کسی بندے کو اپنا‬ ‫ٓ‬‫دوست بناتا ہے تو اس کو اپنی محبت عطا فرماتا ہے اور وہ بندہ اپنے اپ‬ ‫ٓ‬‫کو ہمہ تن اور ہمہ وقت اس کی رضا وخوشنودی کے لیے وقف کر دیتا‬‫ہے تکو خداونکد قدوس اس ککو اپنکی طرف کھینکچ لیتکا ہے، تاککہ وہ اللہ‬ ‫تعالیٰ کی ذات کا مظہر بن جائے’’۔‬ ‫اسلم کی تبلیغ واشاعت‬‫سکلطان الہندحضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ اللہ‬‫علیہ جب علم وعرفاں اورمعرفت وسلوک کے منازل طے کرچکے اوراپنے‬‫شیکخ طریقکت خواجکہ عثمان ہارونکی علیکہ الرحمکۃ ککے علمکی وروحانکی‬‫فیضان سے فیض یاب ہوئے توپھراپنے وطن واپس تشریف لے گئے۔وطن‬‫میں قیام کئے ابھی تھوڑی ہی مدت ہوئی تھی کہ اپ کے دل میں بیت‬ ‫ٓ‬‫اللہ اورروضکہ نبوی صکلی اللہ علیکہ وسکلم ککی زیارت ککے لئے تڑپ پیدا‬‫ہوئی۔چنانچکہ اسکی وقکت اپ اس مقدس سکفرکے لئے چکل پڑے۔حرمیکن‬ ‫ٓ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  8. 8. ‫§‬ ‫1‬‫طیبیکن پہنچنکے ککے بعداپنکے دل ککی مرداپائی اور قلب کوتسککین حاصکل‬‫ہوئی۔ حضورسیدعالم صلی اللہ علیہ وسلم کے روضہ اقدس کے پاس‬‫کئی دنوں تکک عبادت و ریاضکت اورذکروفکرمیکں مشغول رہے۔ایکک دن‬‫اسکی طرح عبادت اورذکرو فککر میکں مسکتغرق تھکے ککہ روضکہ نبوی‬‫ص ککککلی اللہ علی ککککہ وس ککککلم س ککککے ی ککککہ س ککککعادت افروز اوازائی:‬ ‫ٓ ٓ‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫’’اے معیککن الدیککن!توہمارے دیککن کامعیککن ومددگار ہے،ہم نککے تمھیککں‬‫ہندوسکتان ککی ولیکت پرفائزکیاہے، لہٰذااجمیرجاککر اپناقیام کروکیوں ککہ‬‫وہاں کفرو شرک اورگمراہی وضللت کی تاریکیاں پھیلی ہوئی ہیں اور‬‫تمھارے وہاں ٹھہرن ککے س ککے کفروشرک ک ککا اندھیرادور ہوگااوراس ککلم‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫وہدایت کے سورج کی روشنی چہارسوپھیلے گی’’۔‬‫ابھی اپ یہ سوچ ہی رہے تھے کہ ہندو ستان میں اجمیر کس جگہ پر‬ ‫ٓ‬‫ہے ککہ اچانکک اونگکھ اگئی اور حضور سکید عالم صکلی اللہ علیکہ وسکلم‬ ‫ٓ‬‫کی زیارت سے شرف یا ب ہوئے ۔ اپ صلی اللہ علیہ وسلم نے مشرق تا‬ ‫ٓ‬‫مغرب اور شمال تا جنوب تمام ہندوستان کی سیر کر ادی اور اجمیر کا‬ ‫پہاڑ بھی دکھا دیا ۔‬ ‫اجمیر شریف علم وعرفان کا مرکز‬‫اجمیرشریکف!وسکطیٔ ہندکاایکک مشہورشہرہے۔جکس طرح یکہ شہرمرکزِ‬‫سکلطنت بننکے کیلئے موزوں تھکا،اسکی طرح یکہ شہرتوحیدورسکالت ککے‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫انوارو تجلیات اور علم وعرفاں کاروحانی مرکزومنبع بننے کیلئے بھی بے‬‫حکد مناسکب تھکا۔حضرت والنکے ایکک مناسکب جگکہ منتخکب کرککے اس‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  9. 9. ‫§‬ ‫1‬‫کواپنامسکککککن بنالیااور ذکروفکراوریادخداوندی میککککں مشغول ہوگئے۔‬‫لوگوں نے جب اپ کے سیرت وکردار،علم وفضل اورذکروفکر کے اندازو‬ ‫ٓ‬‫اطوار کودیکھا تووہ خودبہ خوداپ کی طرف متوجہ ہوتے گئے۔چنانچہ‬ ‫ٓ‬‫اجمیککر کککا جوبھککی ادمککی ایککک مرتبککہ اپ کککی خدمککت ِعالی میککں‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫حاضرہوجاتاوہ اسککی وقککت اپ کککا مریدو معتقککد اور گرویدہ ہو جاتککا۔‬ ‫ٓ‬‫تھوڑے ہی عرصکہ میکں ہزاروں بلککہ لکھوں لوگوں نکے اپ ککی صکحبت‬ ‫ٓ‬‫کیمیا اثراوراپ کے عظیم اخلق وکردارکے باعث اسلم قبول كيا۔چنانچہ‬ ‫ٓ‬‫ایکک مشہورروایکت ککے مطابکق تقریبا نوے لککھ )09لککھ( غیکر مسکلم‬ ‫اسلم کی دولت سے فیض یاب ہوکرمسلمان ہوئے۔‬ ‫ہندوستان میں اسلم کی روشن کرنیں‬‫حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ کے مقام و‬‫منصب کا اندازہ اس بات سے بہ خوبی لگا یا جا سکتا ہے کہ اپ کو با ر‬ ‫ٓ‬‫گاہِ رسکالت ماب صکلی اللہ علیکہ وسکلم سکے ‘‘قطکب المشائخ’’ ککا لقکب‬ ‫ٓ‬‫عطکا ہوا۔اپ نکے دیکن حکق ککی تبلیکغ ککا مقدس فریضکہ نہایکت شاندار‬ ‫ٓ‬‫طریقے سے سر انجام دیا۔ اج ہندوستان کا گوشہ گوشہ حضرت خواجہ‬ ‫ٓ‬ ‫غریب نواز رحمۃ اللہ علیہ کے فیوض و برکات سے ما لمال ہے ۔‬‫حضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ اللہ علیکہ نکے اپنکے‬‫مریدیکن و معتقدیکن ککو اشاعکت اسکلم اور رشکد و ہدایکت ککی مشعکل‬‫روشکن ککر نکے ککے لئے ہندوسکتان ککے مختلف علقوں میکں روانکہ کیاتکا ککہ‬‫ہندوستان کا گوشہ گوشہ اسلم کی ضیاء پا شیوں سے روشن و تاباں‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  10. 10. ‫§‬ ‫1‬‫ہو جائے ۔ اپ نکے اپنکے عظیکم ککر دار اور اچھکے اخلق سکے بہت جلد غیکر‬ ‫ٓ‬‫مسکلموں ککو اپنکا گرویدہ بنکا لیکا اور وہ فوج در فوج اسکلم قبول ککر نکے‬‫لگکے اور یوں انتہائی قلیکل مدت میکں اجمیکر شریکف اسکلمی ابادی ککا‬ ‫ٓ‬‫عظیم مر کز بن گیا اور اپ کے حسنِ اخلق سے اپ کی غریب نو ازی‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫کا ڈنکا چہار دا نگِ عالم بجنے لگا۔ یہ تھا ایمان ویقین اور علم و عمل‬‫ککا وہ کرشمکہ اور کرامکت جکو ایکک مکر د ِ مکو مکن نکے سکر زمینک ہنکد پکر‬ ‫ِ‬‫دکھکا ئی اور جکس ککی بدولت اس ملک میکں جہاں پہلے ‘‘نکا قوس ’’‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫بجا کر تے تھے ، اب وہاں جگہ جگہ ’’صدائے اللہ اکبر’’ گونجنے لگی ۔‬‫حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ نے اپنی اثر‬‫افریکن جدو جہد سکے اس وسکیع و عریکض ملک ککے باشندوں ککو کفکر و‬ ‫ٓ‬‫شرک اور گمراہی و ضللت کے زنداں سے ازاد فر ما یا ۔ تبلیغ دین حق‬ ‫ٓ‬‫کے لئے اپ سراپا عمل بن کر میدان میں ائے اور محکم استقامت کا بے‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫نظیکر ثبوت دیکا اور لو گوں ککو اسکلم ، حکق و صکداقت اور علم و عمکل‬‫ککککی دعوت دی ، ل کھوں افراد اپ ککککی طرف متوجکککہ ہوئے اور اللہ‬ ‫ٓ‬‫تعال یٰ کے فضل و کرم سے اُن کے دل درست عقائد، عملِ صالح اور پا‬‫کیزہ اخلق ککے نشیمکن بکن گئے اور اصکلحِ معاشرہ ککی تحریکک ککو روز‬‫افزوں اسکتحکام نصکیب ہوا۔ یوں تکو ہزاروں کرامتیکں اپ سکے ظہور پذیکر‬ ‫ٓ‬‫ہوئیکں اور افتاب و مہتاب بکن ککر نمایاں ہوئیکں لیککن اپ ککی سکب سکے‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫بڑی کرامت یہ ہے کہ اپ کے انقلب افرین جدو جہد اور اثر افرین تبلیغ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫اسکلم کے طفیل ہندوسکتان میں دین ِ اسکلم کی حقانیت و صداقت کا‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  11. 11. ‫§‬ ‫1‬‫بکو ل بکا ل ہوا۔سکلطان الہنکد حضرت خواجکہ غریکب نواز رحمکۃ اللہ علیکہ‬‫ک کی ابدی س کلطنت ن کے اجمی کر شری کف ک کو ہمیش کہ ہمیش کہ کیلئے بہشت کِ‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫عقیدت اور جنکت ِمعرفکت بنکا دیکا۔ اپ ککے فیضک بکا طنکی سکے اسکلم ککا‬ ‫ِ‬ ‫ٓ‬‫افتاب ہندوستان میں طلوع ہوا تو لکھوں غیر مسلم اپ کی توجہ سے‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫مشرف بہ اسلم ہوئے ۔تقریبا 54برس تک اپ اجمیر شریف میں حیات‬ ‫ٓ‬ ‫ظاہری کے ساتھ مخلوقِ خدا کو فیض یاب فر ما تے رہے ۔‬‫ہندوستان میں اشاع تِ اسلم اور رشد وہدایت کی شمع روشن کر نا‬‫اپ کا سب سے تاریخی او ر عظیم کا ر نا مہ ہے ۔ رسول اللہ صلی اللہ‬ ‫ٓ‬‫علیکہ وسکلم نکے دعوت وتبلیکغ ککی اہمیکت اور اس پکر اجروثواب ککو اس‬‫طرح اجاگکر اور واضکح فرمایکا ہے۔رسکول اللہ صکلی اللہ علیکہ وسکلم نکے‬ ‫ارشادفرمایا:‬‫مصن سصن فصی السصلم سصنۃ حسصنۃ فعمصل بھھا بعدہ کتصب لہ مثصل اجصر مصن عمصل بھھا۔‬‫ترجمہ: جس نے اسلم میں کسی نیک کا م کی ابتداء کی اوراس کے‬‫بعد اس پر عمل کیا گیا تو اس کے نامہ اعمال میں بھی اس طرح اجر‬‫لکھ دیا جائے گا جیسا کہ عمل کرنے والے کے اعمال نامہ میں لکھاجائے‬ ‫گا’’۔)صحیح مسلم، کتاب العلم(‬‫چنانچکہ فرمان ِک رسکول صکلی اللہ علیکہ وسکلم ککے مطابکق اپ ککی دعوت‬ ‫ٓ‬‫وتبلی کغ، س کیرت و کردار اور آپک کے قدوم کِ میمنت کِ لزوم ک کی برک کت س کے‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫دنیامیکں جکس قدر مسکلمان ہو ئے اور ائندہ قیامکت تکک جتنکے مسکلمان‬ ‫ٓ‬‫ہوں گے اور اُن مسلمانوں کے ہاں جو مسلمان اولد پیدا ہو گی، اُن سب‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  12. 12. ‫§‬ ‫1‬‫ککا اجکر و ثواب حضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ اللہ‬‫علیکہ ککی روحک پکر انوار ککو پہنچتکا رہے گکا،کیونککہ یکہ ایکک ایسکا صکدقہ‬ ‫ِ‬ ‫جاریہ ہے کہ جس کا اجروثواب قیامت تک ملتا رہے گا۔‬ ‫اجمیر شریف امداورپرتھوی راج کی مخالفت‬ ‫ٓ‬‫سککلطان الہندحضرت خواجککہ معیککن الدیککن چشتککی رحمککۃ اللہ علیککہ‬‫لہورسکے دہلی تشریکف لے گئے،جہاں اس دورمیکں ہر طرف کفرو شرک‬‫اورگمراہی کادوردورہ تھکا۔حضرت خواجکہ غریکب نوازعلیکہ الرحمکۃ نکے‬‫یہاں کچکھ عرصکہ قیام فرمایااورپھراپنکے خلیفکۂ خاص حضرت خواجکہ‬‫قطککب الدیککن بختیارکاکککی رحمککۃ اللہ علیککہ کککو مخلوق کککی ہدایککت‬‫اورراہنمائی ککے لئے متعیکن فرماکرخودحضور سکیدعالم صکلی اللہ علیکہ‬‫وسلم کے فرمان کے مطابق اجمیرجانے کاقصد فرمایا،اپ کی امدسے نہ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫صرف اجمیربلکہ پورے ہندوستان کی قسمت جاگ اٹھی ۔‬‫جکب سکلطان الہنکد حضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ‬‫اللہ علیکہ اجمیکر شریکف رونکق افروز ہوئے تواُن دنوں وہاں پرہندوراجکہ‬‫پرتھوی ککی حکمرانکی تھکی۔اپ ککی امدپروہاں کاحاککم راجکہ پرتھوی‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫راج اور ہندوجوگیوں اورجادوگروں نککے سککخت مزاحمککت کککی کککہ اپ‬ ‫ٓ‬‫اجمیرکواپنامرکزو مسکن نہ بنائیں،لیکن اپ کوتو بہ طورِ خاص اسلم‬ ‫ٓ‬‫وہدایکت ککی شمکع روشکن کرنکے ککے لیکے یہاں بھیجاگیاتھکا،پھراپ اپنکے‬ ‫ٓ‬‫عظیم مقصداورمقدس مشن سے کیسے بازاسکتے تھے۔ اپ کی مخالفت‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫ہوتککی رہی اور مقابلہ بھککی ہوتارہا،بدسککے بدتراورسککخت سککے سککخت‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  13. 13. ‫§‬ ‫1‬‫تربھکی سکامنے اتکے رہے لیککن اپ اپنکے عظیکم مقصکدومشن میکں لگکے رہے‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫اوربالخر کامیابی نے اپ ہی کے قدم چومے۔چنانچہ کچھ ہی عرصے میں‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫راجککہ پرتھوی راج کککے سککب سککے بڑے مندرکککا سککب سککے بڑا پجاری‬‫‘‘سکادھورام’’سکب سکے پہلے مشرف بکہ اسکلم ہوا۔اس ککے بعکد اجمیرککے‬‫مشہور جوگکی‘‘جکے پال’’نکے بھکی اسکلم قبول کرلیااوریکہ دونوں بھکی‬‫دعوتک اسکلم وہدایکت اوراسکلمی وروحانکی مشکن ککی تبلیکغ واشاعکت‬ ‫ِ‬ ‫میں خواجہ غریب نوازعلیہ الرحمۃ کے ساتھ ہوگئے۔‬ ‫راجہ پرتھوی راج کاانجام‬‫اجمیرکاراجکہ پرتھوی راج روزانکہ نکت نئے طریقوں سکے حضرت والککو‬‫تکلیف پہنچانے اور پریشان کرنے کی کوششیں کرتا رہتا لیکن اللہ تعالیٰ‬‫کککے فضککل و کرم سککے اس کککی ہرتدبیرالٹککی ہوجاتککی۔اخککر تھککک‬ ‫ک‬ ‫ٓ ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫ہارکرپرتھوی راجہ نے نہایت ناشائستہ انداز و الفاظ میں 81ہزارعالمین‬‫کامشاہدہ کرنکے والے سکلطان الہنکد حضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی‬‫اجمیری رحمۃ اللہ علیہ کواجمیرسے نکل جانے کا کہاتو حضور خواجہ‬‫غریکب نوازرحمکۃ اللہ علیکہ بکے سکاختہ مسککرادیئے اورجلل میکں اککر‬ ‫ک ٓ ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫فرمایا کہ:‬ ‫’’میں نے پرتھوی راج کوزندہ سلمت لشکراسلم کے سپردکردیا’’۔‬‫چنانچکہ اپ کافرمان درسکت ثابکت ہوااورتیسکرے ہی روزفاتکح ہنکد سکلطان‬ ‫ٓ‬‫شہاب الدی کن غوری رحم کۃ اللہ علی کہ ن کے ہندوس کتان کوفت کح کرن کے ک کی‬ ‫ک ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  14. 14. ‫§‬ ‫1‬‫غرض سے دہلی پرزبردست لشکرکشی کی۔راجہ پرتھوی راج لکھوں‬‫ک کا لشک کر لے کرمیدان جن کگ می کں پہنچ کا اور معرک کہ کارزارگرم کردی کا۔‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫کفرواس کلم اورح کق وباط کل ک کے درمیان زبردس کت معرک کہ جاری تھ کا‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫اوردسککت بککہ دسککت لڑائی اپنککے عروج پرتھککی کککہ سککلطان غوری نککے‬‫پرتھوی راج اوراس ککککککے لشکرکوشکسکککککتِ فاش دے کرپرتھوی راج‬‫کوزندہ گرفتارکرلیکا اوربعدازاں وہ قتکل ہوکرواصکلِ جہنکم ہوگیکا۔ راجکہ‬‫پرتھوی ک کے ع کبرت ناک قت کل اور ذلت امیزشکس کت اور س کلطان غوری‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ٓ‬ ‫ک‬ ‫ک ک‬‫ولشکراسکلم ککی عظیکم الشان اور تاریخکی فتکح ککے نتیجکے میکں ہزاروں‬‫لوگ فوج درفوج اسلم قبول کرنے لگے۔یوں اجمیر شریف میں سب سے‬‫پہلے اسکلمی پرچکم سکلطان الہندحضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی‬ ‫اجمیری رحمۃ اللہ علیہ نے نصب فرمایا۔‬ ‫سلطان شہاب الدین غوری کاشر ف ِ بیعت‬‫فاتکح ہندسکلطان شہاب الدیکن غوری بکہ صکدعجزوانکسارسلطان الہنکد‬‫حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ کی خدمت‬‫عالیہ میں حاضرہوا اوراپ سے شرفِ بیعت حاصل کیا۔چنانچہ روایت ہے‬ ‫ٓ‬‫کہ دہلی فتح کرنے کے بعدجب سلطان شہاب الدین غوری اجمیرشریف‬‫میکں داخکل ہوئے تکو شام ہوچککی تھکی۔ مغرب کاوقکت تھکا،اذانک مغرب‬ ‫ِ‬‫سنی تودریافت کرنے پرمعلوم ہواکہ ایک درویش کچھ عرصے سے یہاں‬‫اقامت پذیرہیں۔ چنانچہ سلطان غوری فورا مسجد کی طرف چل پڑے۔‬‫جماعکت کھڑی ہوچککی تھکی اور سکلطان الہندحضرت خواجکہ معیکن‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  15. 15. ‫§‬ ‫1‬‫الدین چشتی اجمیری رحمۃ اللہ علیہ مصلیٔ امامت پرفائزہوکرامامت‬ ‫فرما رہے ہیں ۔ سلطان غوری بھی جماعت میں شامل ہوگئے۔‬‫جکب نمازختکم ہوئی اوراُن ککی نظکر خواجکہ غریکب نوازرحمکۃ اللہ علیکہ‬‫پرپڑی تویہ دیکھ کراپ کوبڑی حیرت ہوئی کہ اپ کے سامنے وہی بزرگ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫جلوہ فرماہیکں، جنہوں نکے اپ کوخواب ککے اندر‘‘فتکح دہلی’’ ککی بشارت‬ ‫ٓ‬‫دی تھکی۔سکلطان شہاب الدیکن غوری فورا اگکے بڑھکے اورخواجکہ غریکب‬ ‫ٓ‬‫نوازککے قدمونمیکں گرگئے اور اپ سکے درخواسکت ککی ککہ حضور!مجھکے‬ ‫ٓ‬‫بھ کی اپن کے مریدوں اورغلموں می کں شام کل فرمالی کں ۔چنانچ کہ حضرت‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫خواجکہ غریکب نوازرحمکۃ اللہ علیکہ نکے اپ ککی اس خواہش ککو شرف‬ ‫ٓ‬ ‫ِقبولیت بخش کراپ کودولت بیعت سے نوازکر اپنامرید بنالیا۔‬ ‫ٓ‬‫یکہ وہی سکلطان شہاب الدیکن غوری رحمکۃ اللہ علیکہ ہیکں جکن ککے نام‬‫نامی اسم گرامی سے ہمارے پیارے وطن اسلمی جمہوریہ پاکستان کا‬‫سکپرپاور اسکلمی ایٹمکی میزائل‘‘غوری میزائل’’موسکوم ہے،جوپاکسکتان‬‫ککے عظیکم فرزنکد،قومکی ہیرو، محسکن قوم ڈاکٹرعبدالقدیکر خان اور اپ‬ ‫ٓ‬‫ک ککے دیگرسککائنس داں س ککاتھیوں ن ککے تخلیککق کیاہے۔ واضککح رہے کککہ‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫ڈاکٹرعبدالقدیرخان سکلطان شہاب الدیکن غوری ککے عظیکم خاندان سکے‬ ‫تعلق رکھتے ہیں۔‬ ‫خواجہ غریب نوازکافیض عام‬‫کون خواجہ اجمیری!!!جو افتا بِ طریقت بھی تھے اور ماہتا بِ شریعت‬ ‫ٓ‬‫بھکی۔۔۔جکو پاسکبانِ حقیقکت بھکی تھکے اور صکاحبِ نسکبت بھکی۔۔۔جورہبرِ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  16. 16. ‫§‬ ‫1‬‫گکم گشتگانک راہ بھکی تھکے اور شبسکتانِ ہدایکت بھکی۔۔۔جکو آلِ رسکول‬ ‫ِ‬‫بھی تھے اور بدرِ ولیت بھی۔۔۔کون خواجہ اجمیری!!!جس کی زندگی‬‫سادہ تھی،لباس پیوند دار تھا۔ خوراک سوکھی روٹی تھی،رہنے کیلئے‬‫ایک جھونپڑی تھی مگر بڑے بڑے اولوالعزم شاہا نِ زمانہ اپ کے استانہ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫پکر حاضکر ہو ککر اپ ککی قدم بوسکی ککو اپنکے لئے سکب سکے بڑی سکعادت‬ ‫ٓ‬‫اور اعزاز سککمجھتے تھککے۔سککلطان شہاب الدیککن غوری اپ کککی قدم‬ ‫ٓ‬‫بوسی کیلئے ایا۔کبھی سلطان شمس الدین التمش نے اپ کے سامنے سر‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫ارادت جھکایااور یکہ سکلسلہ صکرف ظاہری حیات میکں ہی نہیکں بلککہ‬‫بعکد میکں بھکی جاری رہا۔ کبھکی سکلطان محمود خلجکی اپ ککے روضکہ‬ ‫ٓ‬‫انوار پر حاضرہو کر فتح کی دعا مانگتا ہے تو فتح یاب ہوتا ہے اور کبھی‬‫اکبر بادشاہ اپ کی درگاہِ عالیہ میں اولد کی درخواست پیش کرتا ہے‬ ‫ٓ‬‫تکو بامراد لوٹتکا ہے۔ کبھکی جہانگیکر اپنکی شفایابکی پکر سکرِ دربار اپ ککا‬ ‫ٓ‬ ‫حلقہ بگوش غلم ہو جاتا ہے۔‬‫اس وق کت س کے لے ک کر اج ت کک ہندوس کتان ک کے س کارے حکمران بل امتیاز‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک ٓ ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬‫عقیدہ و مسکلک، اس اسکتانہ عالیکہ پکر اپنکا سکر نیاز جھکاتکے ائے ہیکں اور‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫اپ کے تصدق اور اپ کے قدومِ میمنتِ لزوم کے صدقہ میں سر زمینِ ہند‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫رشک ِک اسکمان بنکی رہے گکی۔۔۔اولیاءِکرام اپ ککے دربار ککی خاک ککو چوم‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫کر اپنے قلب و روح کو مجلّی کرکے عروج پاتے ہیں۔ اج بھی اپ کی شانِ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫غریب نوازی کار فرما ہے۔ اپ کا پیغا مِ محبت فضائے عالم میں گونج رہا‬ ‫ٓ‬‫ہے۔اپ ککی محبکت پھولوں ککی خوشبکو ککی طرح پھیلی ہوئی ہے۔صکاحب‬ ‫ٓ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  17. 17. ‫§‬ ‫1‬‫دل،اہلِ محبکت اور اہلِ طریقکت اپ ککے حسکنِ باطکن اور عشقک حقیقکی‬ ‫ِ‬ ‫ٓ‬‫ککے تصکرفات سکے اج بھکی فیکض یاب ہو رہے ہیکں۔ اپ ککے نورِ ولیکت ککا‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫افتاب اج بھکی چمکک اور دمکک رہا ہے۔ اپ ککا قلبکی نور اج بھکی ضیاء‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫بخکش عالم ہے۔اپ ککی انکھوں سکے نکلے ہوئے انسکو اج بھکی ابک حیات‬ ‫ٓ ِ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬ ‫اور بارانِ رحمت کی طرح فیض رساں ہیں۔‬ ‫نامورخلفاء کرام‬‫حضرت خواجکہ خواجگان، قطکب القطاب، سکلطان الہنکد خواجکہ معیکن‬‫الدیکن چشتکی اجمیری رحمکہ اللہ سکے حسکب ِ ذیکل جلیکل القدر ہسکتیوں‬ ‫کو بھی خلفت حاصل ہوئی:‬‫حضرت خواجکہ قطکب الدیکن بختیار کاککی، حضرت بابکا فریکد گنکج شککر،‬‫حضرت علء الدیکن علی بکن احمکد صکابر کُلیری، حضرت خواجکہ نظام‬‫الدیککن اولیاء محبوب ِالٰہی، حضرت خواجککہ نصککیر الدیککن چراغ دہلوی‬‫رحمکہ اللہ علیہم اجمعیکن شامکل ہیکں۔۔۔یکہ برگزیدہ اور عظیکم المرتبکت‬‫بزرگ اپنے وقت کے ولیٔ کامل اور باکرامت اولیاء اللہ ہوئے۔ ان حضرات‬‫نکے حضرت خواجکہ غریکب نواز رحمکہ اللہ ککی جلئی ہوئی شمعک توحیکد‬ ‫ِ‬‫سکے نکہ صکرف خود روشنکی حاصکل ککی بلککہ کروڑوں لوگوں ککو اس‬‫شمعک توحیکد ککی ضیاء پاشیوں سکے فیکض یاب کیکا، جکس ککی بدولت اج‬ ‫ٓ‬ ‫ِ‬‫چہار عالم روشککن و تاباں ہیککں۔۔۔ چناں چککہ خانقاہِ چشتیککہ سککلیمانیہ‬‫تونسککہ شریککف، گولڑہ شریککف، سککیال شریککف،مکھڈشریککف، چشتیاں‬‫شریف وغیرہ کی خانقاہوں کے چراغ اسی شمع کی بدولت روشن ہیں‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  18. 18. ‫§‬ ‫1‬‫اور دوسکروں ککو بھکی نور ایمان و ایقان اور نورِ علم و معرفکت سکے‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫روشن کر رہے ہیں۔‬ ‫وصال مبارک‬‫تاجدارعلم ومعرفت، افتا بِ رشدوہدایت، قطب المشائخ، سلطان الہند،‬ ‫ٓ‬‫خواجکہ غریکب نوازحضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ‬‫اللہ علیکہ ایکک طویکل مدت تکک مشارق ومغارب میکں اسکلم ککی تبلیکغ‬‫واشاعکت کرتکے رہے۔ رشدوہدایکت ککی شمکع جلتکے رہے۔ علم ومعرفکت‬‫کوچہارسککککوپھیلتے رہے۔ لکھوں افراد کومشرف بککککہ اسککککلم کیککککا۔‬‫لتعدادلوگوں ککو صکراطِ مسکتقیم پکر گامزن کیکا۔ ہزاروں ککو رشدوہدایکت‬‫ککا پیککر بنایکا۔ الغرض یکہ ککہ اپ ککی سکاری زندگکی امربالمعروف ونہی‬ ‫ٓ‬‫عکن المنکرپکر عمکل کرتکے ہوئے گزری۔بالخریکہ عظیکم پیکرعلم وعرفاں،‬‫حامکل سکنت وقراں، محبوبک یزداں،محکب سکروروکون ومکاں،شریعکت‬ ‫ِ‬ ‫ٓ‬‫وطریقت کے نیرتاباں حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحمۃ‬‫اللہ علیکہ 6رجکب المرجکب 336ھ/6321ء ککو غروب ہو کرواصکلِ ربّک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫ک‬ ‫دوجہاں ہوگیا۔‬‫روایات میکں اتکا ہے ککہ جکس وقکت اپ ککا وصکال ہوا،اپ ککی پیشانکی‬ ‫ک‬ ‫ٓ ک‬ ‫ک‬ ‫ک ٓ ک‬ ‫ک ک‬ ‫ک ٓک‬‫یعنی‬ ‫مبارکہ پرنورانی خط میں تحریرتھا َا َ َ ِیْ ُ الّٰہ، ِ یْ ُبّ الّٰہ‬ ‫م ت حب ب ل ف ح ل‬ ‫اللہ کا دوست، اللہ کی محبت میں وصال فرماگیا۔‬‫خواجکہ غریکب نوازحضرت خواجکہ معیکن الدیکن چشتکی اجمیری رحمکۃ‬‫اللہ علیکہ ککا مزارپرانوار اجمیکر شریکف)انڈیکا( میکں مرجکع خلئق ہے ۔اپ‬ ‫ٓ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬
  19. 19. ‫§‬ ‫1‬‫کے مزارِ پر انوار پر صرف مسلمان ہی نہیں بلکہ ہندو، سکھ، عیسائی‬‫اور دیگر مذاہب کے بھی ل کھوں افراد بڑی عقیدت و محبت کے ساتھ‬‫حاضکر ہو تکے ہیکں ۔ اجمیکر شریکف میکں اپ ککی درگاہِ عکا لیکہ اج بھکی‬ ‫ٓ‬ ‫ٓ‬‫ایمان و یقین اور علم و معرفت کے نو ر بر ساتی ہے اور ہزاروں خوش‬ ‫نصیب لو گ فیض یاب ہو تے ہیں۔‬‫اپ ککا عرس مبارک ہر سکال نکہ صکرف اجمیرمیکں بلککہ پورے پاک وہنکد‬ ‫ٓ‬‫میں پورے عقیدت واحترام اورتزک واحتشام کے ساتھ منایاجاتا ہے۔ علم‬‫و فضکل ککے عظیکم پیککر،تاجدارِ معرفکت اوررشدو ہدایکت ککے اس عظیکم‬‫سکورج ککو غروب ہوئے کئی سکوسال گزرچککے ہیکں مگراس ککی گرمکی‬‫وحرارت سکے اج بھکی طالبانک علم و معرفکت اسکی طرح فیکض یاب ہو‬ ‫ِ‬ ‫ٓ‬ ‫رہے ہیں، جس طرح اپ کی حیاتِ مبارکہ میں ہوتے تھے۔‬ ‫ٓ‬ ‫‪Copy right by www.fikreraza.org‬‬

×